You are here

احکا م اسلام کو سیکھنا

ایک مسلمان کو چا ہیے کہ وہ زندگی کے تمام گوشوں  میں شریعت کے تمام احکام کو سیکھےچاہے وہ عبادات ہوں,معاملات ہوں, تعلقات ہوں,تا کہ عبادت کو علم وبصیرت کے ساتھ  ادا کر سکے  جیسا کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا  : (( اللہ جس کے  ساتھ بھلائ  چاہتا ہے  اسےدین میں  سوجھ بوجھ  عطا فرما تا ہے  )) ۔            (البخاري 71، مسلم 1037).

چنانچہ ضروری مسائل کا سیکھنا واجب ہے  جیسے کیفیت نماز  ,طہارت  اور کھانے  اورپینے میں مباح و حرام  وغیرہ  نیز  ان احکام  کی معرفت  مستحب  ہے جن کی  شریعت  نے ترغیب  دی  ہے  اگر چہ  ان کا سیکھنا  واجب نہیں  ہے ۔

شر عی احکام۔

انسان کے تمام اقوال وافعال اور اس کے   تصر فات  شریعت کی رو سے ذیل میں محصور ہیں:

واجب 

 ۔جس کا اللہ  نے حکم فر ما یااس کے کر نے والے کو ثواب اور  چھوڑنےوالے کو عقاب ہے , جو چیز قطعی طور پر ثابت ہے جیسے پا نچ   نما زیں,رمضا ن کے روزے  اسے فرض کہتے ہیں۔

حرام 

 ۔(مکروہ تحریمی ) جسے اللہ نے منع فر ما یا ,اس سے بچنے والے کو ثواب اور اسکے کرنے والے کو سزا ہے جیسے زنا اور شراب کاپینا۔

سنت اور مستحب 

 ۔جس کے کرنےکی اسلام نے ترغیب دی ہے ۔  اس کے کرنے والے کو ثواب ہے اور نہ کر نے والےکو کوئ سزا نہیں جیسے لوگوں کے سامنے مسکرانا اور سلام میں پہل کر نااور راستے سے خراب اور گندی چیزوں کو ہٹا نا۔

مکروہ 

 تنزیہی۔وہ جسے اسلام نے ترک کرنے کی  تر غیب دی ہے جس کے نہ کر نے پر ثواب اور اس کے کر نے پر سزا نہیں  جیسے نماز کے اندر انگلیوں کو چٹخنا۔

مبا ح

۔وہ  جس کے کر نے اور نہ کرنے سے متعلق کوئ حکم نہیں اور نہ کوئ منع  ہے  جیسے کھانا  پینا ,بات چیت کرنا ۔

اسلام کے پانچ أرکان۔

نبی ﷺ نے فرمایا:۔ .(( اسلام کی بنیاد پانچ چیز وں پر ہے ۔گواہی دینا اس بات کی کہ بجزء اللہ کے کوئ سچّا معبود نہیں اور یہ کہ محمد ﷺ اللہ کے رسول ہیں,نماز کو قائم کرنا,زکاۃ دینا,حج کرنا ,رمضان کے روزے رہنا))          (بخاری ۸ ۔مسلم۔۱۶ )

یہ پانچ أرکان دین کی بنیاد  ہیں اور اس کے عظیم ستون ہیں  جس  کی وضاحت اور اس کے احکام کی شرح آنے والی فصلوں میں ہم کر یں گے۔

پہلا ایمان اور توحید ہے جو آنے والے باب میں(تیرے ایمان )کےعنوان سے ہے ۔

اس کے بعد نماز جو عظیم تر ین عبا دت ہے اس کا تذ کرہ آ تا ہے ,آپ ﷺ نے فر ما یا : "(( اس کا ستون نما ز ہے)) "(ترمذی ۔۲۷۴۹) ۔یعنی اسلام کا وہ ستون ہے جس پر اسلام کی عما رت قائم ہے  اس کے بغیر اسلام کا تصوّر نہیں  وہ نماز ہے ۔

نما ز کے  صحیح ہونے کے لیے طہا رت کا  ہو نا لازمی ہے اسی لیے (تیرا ایمان )کے باب کے بعد (تیری طہارت )کا بابآے گا  پھر (تیری نماز)اس طرح ان ابوا ب کا ذکر ہوگا۔

اسلام کے أرکان۔

  1. گواہی  دینا اس بات کی کہ بجزء اللہ کے کوئ  سچّا معبود نہیں اور محمد ﷺ اللہ کے رسو ل ہیں۔
  2. ۔نما ز کو قا ئم کر نا ۔
  3. زکا ۃ دینا ۔
  4. رمضا ن کے روزے رہنا ۔
  5. بیت اللہ کا حج کر نا ۔

دليل المسلم الميسر

مسلم سہولت گائیڈ سائٹ ایک معاصر گائیڈ کمپنی منصوبوں 15 سے زائد زبانوں کی پیداوار اور مخصوص الیکٹرانک ٹیمپلیٹس میں سے ایک بڑی تعداد میں مواد فراہم کیا گیا ہے جو اس کتاب (مسلم سہولت گائیڈ) کی الیکٹرانک ورژن ہے.

الدليل المعاصر