You are here

ہمارے وجود کا مقصد

man pray in the mosque

اکثر مفکرین اور دوسرے عام لوگ ہماری زندگی کے اس اہم سؤال کے جو اب میں حیران و پریشان ہیں:
ہم کیوں موجود ہیں ؟
ہماری زند گی کا مقصد کیا ہے؟
اس زندگی میں انسان کے وجود کے مقصد کو قرآن کریم نے پوری وضاحت اور تفصیل کے ساتھ اللہ تعالیٰ کے اس قول میں متعین کیا: ((میں نے جنات اور انسانوں کو محض اسی لیے پیدا کیا ہے کہ وہ صرف میری عبادت کریں)) ۔ (الذاریات 56) ۔ چنانچہ اس زمین میں ہماری زندگی کا مقصد عبادت ہے، بقیہ چیزیں یا تو وسائل ہیں یا اس کی ذیلی چیز یں ہیں یا اس کو مکمل کرنے والی چیزیں ہیں۔
لیکن عبادت کا تصور اور اسلامی مفہوم رھبانیت اور زندگی کی لذتوں سے انقطاع کا نام نہیں ہے بلکہ یہ نماز، روزہ اور زکاۃ کے ساتھ انسان کے ہرعمل، قول و فعل اور اختراعات کو بھی شامل ہے یہاں تک کہ اس کا کھیلنا اور لطف اندوز ہونا بھی اگر نیک نیتی اور اچھے مقصد کے ساتھ ہو تو وہ بھی اسلامی مفہوم میں شامل ہوں گے، اسی وجہ سے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا «وفی بضع احدکم صدقہ» یعنی مسلمان کو اس پر بھی اجر و ثواب ملے گا یہاں تک کہ اپنی اپنی بیوی کے ساتھ خاص حالت میں بھی ہو۔
اس طرح عبادت زندگی کا مقصد ہونے کےساتھ زندگی کی حقیقت ہوجاتی ہے۔ چنانچہ مسلمان انواع واقسام کی عبادتوں میں چلتا پھرتا ہے جیسا کہ اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے ((کہہ دیجیے کہ میری نماز، میری عبادت، میرا جینا، میرا مرنا سب اللہ رب العالمین کے لیے ہے جو سارے جہاں کا مالک ہے)) ۔ (الأنعام: 162)۔ 

آسان رہنمائے مسلم

آسان رہنمائے مسلم کی ویب سائٹ کتاب "آسان رہنمائے مسلم" کا الکٹرانک نسخہ ہے۔ یہ شرکۃ الدلیل المعاصر کا ایک پروجیکٹ ہے، جسے زائد از پندرہ زبانوں میں تیار کیا گیا ہے، اور اس کے مشمولات متعدد معیاری الکٹرانک شکلوں میں موجود ہیں۔